اردو زبان میں انفارمیشن ٹیکنالوجی کا مستند جریدہ

وائٹ ہاؤس میں موبائل فونز پر پابندی لگا دی گئی

314

امریکا کے صدر کی باضابطہ رہائش گاہ وائٹ ہاؤس نے تمام ملازمین کے ذاتی موبائل فونز پر پابندی لگا دی ہے۔ ویسے تو اس پابندی کی خبریں نومبر سے آنا شروع ہوگئی تھیں، لیکن پریس سیکریٹری سارا ہکابی سینڈرز کے مطابق اس کا اطلاق سوموار سے ہو رہا ہے۔ یہ حکم وائٹ ہاؤس کے چیف آف اسٹاف جان کیلی کی جانب سے آیا ہے جنہوں نے اس فیصلے کی وجہ سکیورٹی خدشات کو قرار دیا ہے۔

آج جاری کیے گئے بیان میں سینڈرز نے کہا کہ "وائٹ ہاؤس میں موجودہ ٹیکنالوجی سسٹمز کی حفاظت اور سلامتی ٹرمپ انتظامیہ کی اولین ترجیح ہے اوراس لیے اگلے ہفتے سے مہمانوں اور عملے دونوں کے لیے ذاتی ڈیوائسز کا استعمال ممنوع ہوگا۔عملے کو اپنا کام حکومت کی جاری کردہ ڈیوائسز پر کرنا ہوگا۔”

اس فیصلے سے خدشہ پیدا ہوگیا ہےکہ وائٹ ہاؤس ملازمین کام کے دوران اپنے اہل خانہ سے مکمل طور پر کٹ جائیں گے۔صدارتی رہائش گاہ میں موجود ٹیلی فون ویسے بھی ذاتی کاموں کے لیے استعمال نہیں کیے جا سکتے۔

ذرائع کے مطابق اس پابندی کی وجہ سکیورٹی خدشات اور وائی فائی نیٹ ورک پر بڑھتا ہوا بوجھ ہے۔ اس کے علاوہ وائٹ ہاؤس عملے کے اراکین کی جانب سے کسی بھی قسم کی معلومات کے افشاء کو کنٹرول کرنے کی کوشش کر رہا ہے اور یہ اس کا بہترین طریقہ ہے۔

تبصرے
لوڈنگ۔۔۔۔
error: اس ویب سائٹ پر شائع شدہ تمام مواد کے قانونی حقوق بحق ادارہ محفوظ ہیں