اردو زبان میں انفارمیشن ٹیکنالوجی کا مستند جریدہ

سپر سونک سفر کا خواب اب تعبیر کے اور قریب پہنچ گیا

747

شہری ہوابازی میں سپر سونک سفر کو نئی زندگی بخشنے کے لیے کوشاں بوم کے ارادوں کو مہمیز ملی ہے کیونکہ جاپان ایئرلائنز نے ادارے میں 10 ملین ڈالرز کی سرمایہ کاری کا اعلان کردیا ہے۔ جاپانی ایئرلائن بوم سے 20 ہوائی جہاز بھی خرید سکتی ہے جو آواز کی رفتار سے زیادہ تیز سفر کریں گے۔ یعنی بوم کے آرڈرز کی تعداد اب 76 تک پہنچ گئی ہے۔

بوم کا کہنا ہے کہ ایک سال سے زیادہ عرصہ ہوچکا جاپان ایئرلائنز ہمارے ساتھ کام کر رہا تھا لیکن اب تازہ سرمایہ کاری نے اس اتحاد کو باضابطہ صورت دے دی ہے ۔ یہ پہلا موقع ہے کہ کسی ایئرلائن نے سپر سونک ہوائی جہاز کے ساتھ مالی وابستگی اختیار کی ہو۔ مشہور زمانہ سپر سونک مسافر جہاز کانکرڈ کے لیے بھی ایئرفرانس اور برٹش ایئرویز نے صرف پری آرڈرز دیے تھے، اس کی تیاری میں ان کی کوئی  تکنیکی مدد شامل نہیں تھی اور سب سے بڑھ کر یہ کہ برٹش ایئرویز کو حکومت کی جانب سے سبسڈی ملی تھی جس کی وجہ سے اسے کانکرڈ بہت کم قیمت میں ملے تھے۔

بہرحال، جاپان ایئرلائنز کی سرمایہ کاری اس لیے اہم قدم ہے کیونکہ بوم کا کوئی ہوائی جہاز 2023ء تک سروس میں آنے کا امکان نہیں۔ شاید جاپان ایئرلائنز نے اپنے مستقبل کو دیکھتے ہوئے یہ فیصلہ کیا ہے کیونکہ ادارے کی زیادہ تر بین الاقوامی پروازیں طویل فاصلے کی ہیں اور وہ بوم کے تیز رفتار ہوائی جہازوں کے ذریعے اپنے مسافروں کے لیے سفر کے دورانیے کو ڈرامائی حد تک کم کر سکتا ہے۔

یقیناً آپ سپرسونک مسافر طیاروں کے بارے میں جانتے ہوں گے یہ مسافر طیارے دیگر طیاروں کے مقابلے میں آدھے وقت میں سفر مکمل کرنے کی اہلیت رکھتے ہیں۔ لندن سے نیویارک کا سفر جو طیارے سات گھنٹے میں مکمل کرتے ہیں سپرسونک کانکرڈ اسے تین گھنٹے اور تیس منٹ میں مکمل کرتا تھا۔

اس کی مزید تفصیل جانیے

تبصرے
لوڈنگ۔۔۔۔
error: اس ویب سائٹ پر شائع شدہ تمام مواد کے قانونی حقوق بحق ادارہ محفوظ ہیں