مصنوعی ذہانت سے لیس ایل جی کا شاہکار G7 ThinQ اسمارٹ فون

2,599

عام گھریلو مصنوعات کے حوالے سے ایل جی کا نام کسی تعارف کا محتاج نہیں۔ ایل جی کافی عرصہ سے اسمارٹ فون کی دنیا میں بھی اپنا مقام بنائے ہوئے ہے۔ گو کہ ایل جی دنیا کی پانچ بڑی اسمارٹ فون کمپنیوں میں شمار نہیں ہوتا۔ لیکن گزشتہ سال سے LG V30 اور LG G6 جیسے فلیگ شپ فونز کی ریلیز کے بعد سے یہ توقع کی جا رہی ہے کہ ایل جی مستقبل قریب میں اسمارٹ فون مارکیٹ میں ایک بڑی کمپنی کے طور پر ابھر کر سامنے آئے گا۔

ایل جی کے G6 فون سے متاثر بڑے بڑے ٹیلنالوجی ماہرین یہ امید لگائے بیٹھے ہیں کہ اس سال ایل جی کا فلیگ شپ فون سام سنگ کے گیلیکسی ایس 9 اور آئی فون کی ٹکر کا ہو گا۔ اور لگتا یہی ہے کہ ایل جی ان کی امیدوں پر پورا اترنے والا ہے۔ کیونکہ معروف ٹیکنالوجی بلاگ سی نیٹ کے کچھ ایڈیٹرز نے امریکی شہر نیویارک اور سان فرانسسکو میں ایل جی G7 ماڈل کی ابتدائی مراحل پر تیاری کا معائنہ کیا ہے اور یہ قرار دیا ہے کہ ایل جی کا اگلا فلیگ شپ فون انقلابی خوبیوں کا حامل ہو گا۔

آئیے دیکھتے ہیں کہ ایل جی G7 کی پانچ نمایاں خوبیاں کون سی ہیں جو اسے دوسرے فونز سے ممتاز بنا سکتی ہیں۔

1. گوگل اسسٹنٹ کو چلانے کے لیے مخصوص بٹن

اس میں گوگل اسسٹنٹ کا خصوصی بٹن لگایا گیا ہے۔ جسے دباتے ہی ایپل کے سری اور ایمیزون کے ایلیکزا کے ہم پلہ گوگل اسٹنٹ ایپ چلتی ہے۔ اس کے لیے 32 صوتی کمانڈز پہلے سے ہی طے شدہ ہیں۔ جنہیں بول کر آپ اسمارٹ کے مخصوص افعال کو متحرک کر سکتے ہیں۔

بٹن کو دو بار پریس کرنے سے بصری تلاش کو چلایا جا سکتا ہے۔ نیز اگر بٹن کو دبائے رکھیں تو "اوکے گوگل” کہنے کی بھی ضرورت نہیں رہتی۔ اور براہ راست کمانڈز پر عمل کروایا جا سکتا ہے۔

2۔ مصنوعی ذہانت سے لیس کیمرہ سیٹنگ موڈ

ایل جی کے G7 فون میں مصنوعی ذہانت سے لیس کیمرہ سیٹنگ موڈ موجود ہے جس کی مدد سے کیمرہ اپنی سیٹنگز خود کرتا ہے۔اس مقصد کے لیے ایل جی کے تیار کردہ مصنوعی ذہانت کے سافٹ وئیر ThinQ کا استعمال کیا گیا ہے۔ جو کہ اس سے پہلے V30 ورژن میں بھی موجود تھا۔

ایل جی کا کہنا ہے کہ مستقبل میں ThinQ اس کی دیگر تمام مصنوعات مثلاً ٹی وی، ریفریجریٹر، اوون وغیرہ میں بھی نصب ہو گا۔ اس طرح مصنوعی ذہانت پر مشتمل اشیاء کا ایک مربوط نیٹ ورک قائم ہو گا جو کہ آپس میں رابطہ کر سکیں گی۔

فی الحال یہ سافٹ وئیر G7 کے کیمرہ سیٹنگز کو خودکار طریقے سے چلانے کے لیے نصب کیا گیا ہے۔ جس کی مدد سے کیمرہ اردگرد موجود منظر کی شناخت کرتے ہوئے فون میں موجود 18 مختلف کیٹگریز میں سے کسی ایک کا خود ہی انتخاب کر کے تصاویر لے گا۔ یہ خوبی ہوواوے P20 میں بھی محدود پیمانے پر موجود ہے۔

3۔ "نوچ” پر مشتمل نشان زد LCD اسکرین

ویسے تو یہ خوبی رواں سال کے اکثر فونز میں متعارف کروائی جا رہی ہے۔ لیکن G7 میں ایسے نوچ پر مشتمل نشان زد اسکرین ہے جسے بوقت ضرورت اطلاعات (نوٹیفیکیشنز) کی سیاہ بار میں بھی تبدیل کیا جا سکتا ہے۔ یہ خوبی ہوواوے P20 اور آئندہ آنے والے ون پلس 6 میں بھی متعارف کروائی گئی ہے۔

ایل جی G7 کی اسکرین کو نامیاتی ایل ای ڈی (OLED) کی بجائے مائع قلماتی اسکرین (LCD) میں تیار کر رہا ہے۔ لیکن ایل جی کا کہنا ہے کہ یہ اسکرین نامیاتی کی بہ نسبت زیادہ روشن ہو گی۔ کیونکہ اس میں سرخ، سبز، نیلے اور اضافی سفید پکسل کا استعمال کیا گیا ہے جو کہ ڈسپلے کے میعار کو زیادہ بہتر بناتی ہے۔

4۔ "بوم بوم” اسپیکر اور "دھوم زوم” مائیک

ایل جی کا دعویٰ ہے کہ G7 ماڈل کا اسپیکر دیگر فونز کی نسبت کہیں زیادہ بہتر اور صاف آواز دے گا۔ کیونکہ اس کے اطراف میں گمک کار چیمبر لگائے گئے ہیں۔ جو اسپیکر کی آواز کو زیادہ بڑھا کر پیش کرتے ہیں۔ گو کہ اس میں اسٹیریو کی بجائے ایک اسپیکر نصب کیا گیا ہے لیکن صاف اور تیز آواز کے لیے ایک اسپیکر ہی کافی ہے۔

اس کے علاوہ فون میں آواز کو دور سے ہی محسوس کرنے والا مائیک بھی نصب کیا گیا ہے۔ یہ مائیکروفون 16 فٹ (تقریباً 4.9 میٹر) سے بھی آواز کو شناخت کر سکتا ہے۔ گویا اس کی مدد سے آپ اپنے سے دور چارجنگ وغیرہ پر رکھے فون سے بھی گوگل اسسٹنٹ سے مخاطب ہو سکتے ہیں۔

5۔ ہائی-اینڈ میوزک پلے بیک

ایل جی نے یہ فیچر اپنے گزشتہ V30 ماڈل میں بھی متعارف کروایا تھا۔ اس میں سراؤنڈ ساؤنڈ کو بہتر بنانے کے لیے DAC پہلے سے نصب شدہ ہے۔ اس کی مدد سے آپ ہائی-اینڈ "بغیر نقصان” آڈیو مثلاً Tidal کو سن سکتے ہیں۔

اس کے علاوہ فون 7.1 سراؤنڈ ساؤنڈ DTS X اسپوررٹ بھی شامل ہے۔ لیکن اس کے لیے آپ کو علحیدہ سے وائرلیس اسپیکرز یا ہیڈفونز استعمال کرنا پڑیں گے۔ کیونکہ 7.1 کی سراؤنڈ ساؤنڈ فون کے اسپیکر سے شناخت نہیں کی جا سکتی۔

یہ تو تھیں ایل جی G7 کی نمایاں خصوصیات، اب ذرا ایک نظر دیگر خصوصیات پر:

ڈسپلے: 6.1 IPS LCD ڈسپلے

ریزولیوشن: 3120×1440 پکسلز

پراسیسر: 2.8 گیگا ہرٹز، ہشت کور کوالکوم اسنیپ ڈریگن 845 پراسیسر چپ

عارضی میموری: 4 گیگا بائٹس

اندرونی اسٹوریج: 64 گیگا بائٹس (اضافی کارڈ سلاٹ کے ذریعے 2 ٹیرا بائیٹس تک بڑھانے کی گنجائش)

عقبی کیمرا: 16 میگا پکسل کے 71 درجے اور 107 درجے فیلڈ ویو والے دوہرے عدسوں پر مشتمل کیمرہ(4K ویڈیو ریکارڈنگ کی سہولت کے ساتھ)

ثانوی کیمرہ: 8 میگا پکسل، 90 درجے فیلڈ ویو کے ساتھ

بیٹری: 3000 mAh طاقت کی حامل لیتھیم آئن بیٹری

اضافی خوبیاں: پانی و گرد مزاحم (IP68 میعار)،بغیر تار کے چارجنگ اور DTS X 3D ساؤنڈ

فون کی قیمت کا ابھی اعلان نہیں کیا گیا۔ تاہم یہ توقع کی جا رہی ہے کہ یہ فون ایل جی G6 کے تقریباً برابر قیمت میں فروخت کیا جائے گا۔ جو کہ سام سنگ کے عصر گیلیکسی فونز سے قدرے کم ہوتی ہے۔

تبصرے
لوڈنگ۔۔۔۔
error: اس ویب سائٹ پر شائع شدہ تمام مواد کے قانونی حقوق بحق ادارہ محفوظ ہیں