اردو زبان میں انفارمیشن ٹیکنالوجی کا مستند جریدہ

گوپرو نے ڈرون بنانا ہی چھوڑ دیا

531

گوپرو (GoPro) نے ڈرون بزنس کو چھوڑنے کا اعلان کردیا ہے، جس کی وجہ مارکیٹ میں بڑھتی ہوئی مسابقت کی وجہ سےمنافع حاصل کرنے میں دشواری بتائی گئی ہے۔ ادارے نے یہ انکشاف اپنی سالانہ آمدنی رپورٹ کے دوران کیا، جس مطابق کرما ڈرون اس کا بنایا گیا آخری ڈرون ہوگا۔ ادارے نے ساتھ ہی سینکڑوں ملازمین کو بھی فارغ کیا ہے اور سی ای او نکولس ووڈمین کی تنخواہ گھٹاتے ہوئے صرف 1 ڈالر کردی ہے کیونکہ ادارہ اپنے مالی معاملات میں مشکلات کا سامنا کررہا ہے۔

799 ڈالرز کے کرما ڈرون کی رونمائی پہلی بار 2016ء کے اواخر میں کی گئی تھی، لیکن یہ نامکمل اور مہنگي پروڈکٹ ثابت ہوئی۔ مسائل کی وجہ سے نومبر میں تمام کرما یونٹ واپس لینے پڑے، جبکہ ماہرین نے DJI سمیت دیگر حریف اداروں کے مقابلے میں ان ڈرونز پر سخت تنقید بھی کی۔ نتیجتاً 2016ء میں ادارے کو 373 ملین ڈالرز کا نقصان ہوا، البتہ 2017ء میں مالی حالات کچھ بہتر ضرور ہوئے۔ اپنی تازہ ترین آمدنی رپورٹ میں کمپنی نے مسائل کی ایک وجہ ڈرون کی مارکیٹ میں یورپ اور امریکا کے نئے سخت قوانین کو بھی قرار دیا۔

بیان میں ادارے نے کہا ہے کہ مختلف عوامل کی بنیاد پر اب گوپرو اپنے باقی کرما ڈرون فروخت کرنے کے بعد مارکیٹ چھوڑ دے گا لیکن کرما صارفین کے لیے سروس اور سپورٹ فراہم کرتا رہے گا۔

آمدنی کے معاملے میں 2017ء کی چوتھی سہ ماہی میں گوپرو کی کمائی 340 ملین ڈالرز تک رہی۔ یہ 2016ء کی اسی سہ ماہی کے مقابلے میں کہیں کم ہے جبکہ تعطیلات و خریداری کے اس سیزن میں 470 ملین ڈالرز آمدنی کی امید تھی۔ اب مستقبل میں ممکن ہے کہ گوپرو منافع بخش ادارہ بن جائے لیکن حقیقت یہ ہے کہ اس کا سنہرا دور اب ختم ہو چکا ہے۔

تبصرے
لوڈنگ۔۔۔۔
error: اس ویب سائٹ پر شائع شدہ تمام مواد کے قانونی حقوق بحق ادارہ محفوظ ہیں